سرکار ایسا کوئی کام نہیں کرے گاجس سے کشمیریوں کو تکلیف ہو : گورنر

کشمیری مہمان نواز ، کشمیر دنیا کی خوبصورت جگہ ، جہاں سیاحوں کو کوئی خطرہ نہیں

سرکار ایسا کوئی کام نہیں کرے گاجس سے کشمیریوں کو تکلیف ہو : گورنر

سرینگر٦،اپریل ؍کے این ایس ؍ ریاست جموں و کشمیر کے گورنر ستیہ پال ملک نے بتایا سرکار ایسا کوئی کام نہیں کرے گی جس کے نتیجے میں کشمیری عوام کو کوئی تکلیف پہنچے گی ۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر دنیا کی خوبصور ت جگہ ہے جہاںکشمیری مہمان نواز اور کشمیر سیاحوں کے لئے محفوظ ہیں ۔ ’’ جہاںہمیں خطرہ ہو سکتا ہے سیاحوں کو نہیں ‘‘ ۔ گورنر نے بتایا سیاحوں کو وادی کی طرف راغب کرنے کے لئے دلی میں عنقریب ایک کانفرنس منعقد کی جائے گئی جس میں ایمبیسڈروں کو بلا کر وادی کشمیر کے سیر پر جاری ایڈوائزی کو ختم کرنے کی کوشش کی جائے گی ۔ گورنر نے کہا کہ ریاست کے سیاسی لیڈران سسٹم کا اہم حصہ ہے ان کے لئے یہاں جگہ ہے تاہم انہیں میں ہاتھ جوڑ کر گزارش کرتا ہوںکہ جنگجوئوں اور حریت لیڈران کی زبان میں فرق کرنی چاہے ۔ ستیہ پال ملک نے کہا وادی میں پارلیمانی انتخابات میں شرکر ت کر رہے تمام سیاسی لیڈران کو ضرورت کے مطابق سیکورٹی فراہم کی جائے گی تاکہ ریاست میں پر امن انتخابات منعقد کئے جائیں گے جس کے حوالے سے تمام تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں ۔ گورنر زبرون پہاڑیوں کے دامن میں واقع ایشا کے سب سے بڑے ’’گل لالہ باغ ‘‘میں صوبائی انتظامیہ کے ہمراہ سیر کے دوران میڈیا سے بات کر رہے تھے ۔ کشمیرنیوز سروس ( کے این ایس ) کے مطابق ریاست جموں کشمیر کے گورنر ستیہ پال ملک نے سنیچر کے روزصوبائی انتظامیہ کے ہمراہ زبرون پہاڑیوں کے دامن میں واقع ایشا کے سب سے بڑے پھولوں کا باغ ’’باغ گلِ لالہ ‘‘کی اچانک سیر کی ہے ۔اس دوران گورنر نے سیر کے دوران ہی میڈیا سے بات کرتے ہوئے سرینگر جموں شاہراہ پر ہفتے میں2دن عام ٹرانسپوٹ کو بند رکھنے کے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا ڈیویژنل کمشنر نے اس حوالے سے پہلے ہی پرس کانفرنس کی ہے جس میں کچھ تبدیل لائی گئی ہے گور نر نے بتایا سنیچر کو ہی ہم بعد دوپہر گزشتہ چار روز کے دوران سامنے آئے کچھ مسائل چاہے وہ سیکورٹی کے ہو یا سرینگر جموں شاہراہ کی ہو ان کے حوالے سے ایک میٹنگ منعقد کرنے جا رہے ہیں انہوں نے بتایا وہ ٹیولپ گاڑن صرف گھومنے کے لئے نہیں آئے بلکہ ہم یہاں ہی ایک اہم ایک میٹنگ منعقد کریں گے جس دوران تمام مسائل پر بات ہوئی گی ۔انہوں نے بتایا میں کشمیرکے عوام کو یقین دلاتا ہوں سرکار ایسا کوئی کام نہیں کرے گئی جس سے کشمیری عوام کو تکلیف اٹھانی پڑے ۔ستیہ پال ملک نے دنیاں کو ایک پیغام دیا ہے کشمیر ایک خوبصورت جگہ ہے اور کشمیری مہمان نواز ہیں جن میں جہاں ہر ایک کو آنا چاہے انہوں نے بتایا کشمیر کے لوگوںکی مہمان نوازی کشمیر کی منفرد پہچان آج بھی موجود ہے جبکہ کشمیر سیاحوں کے لئے بلکل محفوظ ہے انہوں نے بتایا ’’ہمیں خطرہ وسکتا ہے لیکن سیاحوں کشمیر آنے میں کسی بھی سیاح کو کوئی بھی خطرہ نہیںہے ‘‘۔گورنر نے بتایا سرکار بہت جلد دلی میں ایک کانفرنس منعقد کریں گے جس میں ایمسڈرس کو بلا کر انہیں اپنے اپنے ممالک کی جانب اس ایڈوائزی کو ختم کروانے کی کوشش کریں گئی جس میں انہیں کشمیر جانے سے اجتناب کا مشورہ پہلے دیا گیا تھا ۔ستیہ پال ملک نے بتایا کشمیر میں پہلے بھی سیاح آئے ہیں کسی کوئی نقصان نہیں پہنچا ہے ۔انہوں نے بتایا ہمیں باغ گل لالہ میں نہیں آنا تھا بلکہ یہاں آنے کا ہمیں صرف ایک ہی مقصد تھا کہ ہم دنیاں کو بتائیں کہ کشمیر ایک خوب صورت جگہ ہے یہاں آنے میں کسی کو کوئی خطرہ نہیں ہے ۔ آنے والے پارلیمانی انتخابات کے حوالے سے گورنر نے بتایا جتنی سیکورٹی ضروری ہے اتنی سب کو دی جائے گئے ۔ انہوںکسی کا نام بنا بتائے بتایا میں نے 2لیڈران سے بات کی ہے کہ آپ کو کتنی سیکورٹی ضرورت ہے آپ کو فراہم کی جائے گی اور ایک اچھا پر امن انتخابات منعقد کریں گے ۔ایک سوال کے جواب میں گورنر نے کہا کہ سیاسی لیڈران کو یہ سوچ لینا چاہے کہ دنیا بدل گئی اور ہندوستان بھی بدلا ہے انہوں نے کہا کہ میں سیاسی لیڈران سے ہاتھ جوڑ کر گزارش کرتا ہوں کہ سیاسی باتیں یا چناو کی باتیں کہو لیکن ایسی باتیں مت کہو جس سے امن کو خطرہ ہو جس سے جنگجوئیت میں اضافہ ہو ۔ انہوںنے بتایا سیاسی پارٹیوں کے لیڈران لو سوچنا چاہے کہ جنگجوئوں اور حریت لیڈران میں فرق ہونا چاہے انہوں نے کہا ان سے مشورہ دیتے ہیں کہ ہم سب آپ کی عزت کرتے ہیں وہ اس سسٹم کا حصہ ہیںان کی یہاں جگہ ہیں آپکے بنا یہاں سسٹم نہیں ہے لیکن آپ صیح زبان کا استعمال کریں ۔ انہوں بتایا کہ آنے والے انتخابات پر امن طور منعقد کئے جائیں گے جس کے لئے تمام تیاریاں مکمل کی گئی ہیں ۔آرٹیکل35A اور دفعہ370 کے بارے میں انہوں نے کہا اس پر میں بات نہیں کروں گا یہ میرا سبجکٹ نہیں ہے تاہم یہ میںضرور کہوں گا اگر مگر نہیں چلے گااور اس پر بات نہیں ہو گئی یہ اسی وقت وقت بات ہوگی۔انہوں نے بتایا اسے سے لوگوں میںفرضی خوف پیدا کر کے ووٹ بٹورنے کے لئے کہا جاتا ہے جس کے حق میں ہم نہیںہے۔ انہوں نے بتایا کہ یہ پوچھو گور نر رول میں کتنی کام ہوئی ہے کتنے تعلیمی ادارے کھل گئے ۔انہوں نے بتایا یہاں ٹرانسفارمر کے لئے گولی چلی لیکن مجھے کسی دور دروز علاقے سے کوئی بجلی ٹرانسفارمر کی شکایت کرتا ہے اوردوسرے دن یہاں ٹرانسفارمر چلتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ60ہزار عوامی شکایت کا ازالہ کیاگیا ہے ۔ گورنر نے بتایا کوئی رات کے2بجے بھی آتا ہے بنا پلان کے میں انہیں اندر بلا کے میں ملتا ہوں ۔گورنر ستیہ پال ملک نے سنیچر کے روز اشیا کے سب سے بڑی گل لاہ باغ کا دورہ کیا ہے ان کے ہمراہ آئی جی پی کشمیر ،صوبائی کمشنر ،بصیر احمد خان کے ساتھ ساتھ رضاکاروں اور دیگر افسران کی ایک بڑی تعداد بھی موجود تھی خیال رہے باغ گل لاہ 31اپریل کو محکمہ فلوری کلچر نے لوگوں کے لئے کھول دیا تھا تاہم انتخابی ضابطہ اخلاق کے نتیجے میں یہاں کوئی تقریب منعقد نہیںہوئی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.